لاکھ تم اشک چھپاؤ، ہنسی میں بہلاؤ

لاکھ تم اشک چھپاؤ، ہنسی میں بہلاؤ

لاکھ تم اشک چھپاؤ، ہنسی میں بہلاؤ! چشمِ نمناک بتاتی ہے کہ تم روئے ہو! یہ جو رُخ موڑ کے تم نے کہا نا، “ٹھیک ہوں میں” مجھے آواز بتاتی ہے کہ تم روئے ہو! جو اُترتی ہے “مری” آنکھ میں گاہے گاہے وہ نمی صاف بتاتی ہے کہ “تم” …

Read moreلاکھ تم اشک چھپاؤ، ہنسی میں بہلاؤ